Jump to content
URDU FUN CLUB

faizanoor

Active Members
  • Content Count

    343
  • Joined

  • Last visited

  • Days Won

    26

faizanoor last won the day on May 12 2018

faizanoor had the most liked content!

Community Reputation

766

Profile Information

  • Gender
    Female

Recent Profile Visitors

The recent visitors block is disabled and is not being shown to other users.

  1. معاف کیجئے گا ایک قتل کے کیس میں تفشیش کار کے جنسی روئیے کو غیر ضروری اہمیت دی جارہی ہے
  2. کونسا قتل کیس ڈاکٹر صاحب؟ حیرت ہے مجھے یہ اندازہ نہیں ہوا۔
  3. کسی بھی انسان کی تخلیقی صلاحیت قدرت کیطرف سے ایک تحفہ ہوتا ہے۔ انسان اپنی اس صلاحیت کا استعمال کرکے اپنے ارد گرد کے لوگوں کو فائدہ پہنچانے کا کام کرتا ہے۔ یہی کام ڈاکٹر فیصل کر رہے ہیں۔ کھپرو کی ملکہ ایک انتہائی مشکل موضوع تھا لکھنے کیلئے۔ ایک عام لکھاری کیلئے اس پر لکھنا ممکن نہیں تھا۔ مگر اپنی تخلیقی صلاحیت کو بروُے کار لاتے ہوئے فیصل نے جس انداز میں اس موضوع کو پابندِ تحریر کیا ہے وہ لائق تحسین ہے۔ صرف سیکس لکھنا ہی کمال نہیں ہے جن حالات اور ماحول میں وہ سیکس کیا جاتا ہے یا ہورہا ہوتا ہے اسکا احاطہ کرنا اصل کمال ہے۔ اندرون سندھ کے سماجی حالات کو اگرچہ فیصل نے بہترین انداز میں قلم بند کیا ہے مگر میری رائے میں وہاں کے حالات اس سے زیادہ گھمبیر ہیں۔ بیرحال کہانی کا رخ اب تبدیل ہونے جارہا ہے جو اب تک ہم نے پڑھا شاید وہ صرف پیش لفظ تھا داستان اب شروع ہونے جارہی ہے۔ ماروی کی بھابھی کا کا سانول سے ملاپ یہ ظاہر کر رہا ہے کہ اب ظلم کو بغاوت کا سامنا ہوگا۔ ماروی کے بھائی کا اپنی نوبیاہتا بیوی کا اقدامِ قتل بھی اسی نظام کا حصہ ہے جو ان پر مسلط کردیا گیا ہے اپنی بہن کو بچانے کیلئے کسی بے گناہ کی ناکردہ جرم میں جان لینا ہی شاید وہاں کا رواج ہے ۔
  4. یہ تو آپ نےا سکتے ہیں۔ کیا واقعی یہ ممکن ہے؟
  5. بس یہی مجھے پسند ہے۔ تیرہ سال کی بچی ہو اور میچور یا لڑکا چودہ پندرہ سال کا ہو اور لڑکی میچور ہو۔۔۔سیکس کا مزہ دوبالا ہوجاتا ہے آپ تو اچھے بھلے رائٹر ہو یار۔ لکھتے کیوں نہیں۔ فورم کی انتظامیہ نوٹس لے بھئی
  6. حالانکہ یہ ےو لڑکی کو سوچنا چاہئے کہ منہ میں لیتے وقت کہ پتہ نہیں اوزار کیسا ہوگا۔ چھوتی عمر کی لڑکیوں کے بارے میں آپ نے لکھا کہ ان پر شہوت بہت آتی ہے وجہ پھر کبھی ذکر کرنے کا کہا۔ پلیز وجہ لازمی شئیر کیجئے گا۔ میں نے خود پہلی بار سیکس اسکول لائف میں لائیو دیکھا۔ اور وہ منظر آج بھی میری دماغ کی ہارڈ ڈسک میں محفوظ یے کہ جب اسکول واش روم میں ایک لڑکی گھٹنوں کے بل بیٹھی لڑکے کا سک کر رہی تھی۔ میں اسوقت نائین یا ٹین میں تھی مجھے آج بھی اسکول سیکس یا چھوٹی عمر بالکل چھوٹی نہیں یہی کوئی تیرہ تا سولہ سالہ لڑکیوں کے سیکس سین اور سٹوریز پسند ہیں
  7. ڈاکٹر صاحب وہی والا شئیر کردیں آپکی ایک ننھی فین والا
  8. آج کی اپڈیٹ پڑھ کر ایک کہانی ڈاکٹر صاحب کی یاد آگئی جسکا نام تھا باراتی کی سہاگ رات۔ جس میں ہیرو نے شادی والے گھر میں ایک ٹین ایج بچی کو پھوڑ دیا تھا۔ بہرحال کمال کی اپڈیٹ تھی نہ نہ کرتی مومو کا رویہ اچانک چینج ہوا اور ایسا جب ہوتا ہے جب لڑکی خود گیلی ہونے لگے۔ جو لڑکے کسی لڑکی کو سیٹ کرنے کے بعد بھی اس سے محروم رہیں وہ لڑکیوں کی نفسیات سے ناواقف ہوتے ہیں۔ اور جو لڑکے یا لوگ لڑکیوں کی نفسیات کے بارے میں علم رکھتے ہیں انھیں معلوم ہوتا کہ چوٹ کب اور کہاں مارنی ہے۔ اس سلسلہ میں میرے پاس ایک واقعہ ہے جو کبھی شئیر کروگی۔ چونکہ ڈاکٹر صاحب لڑکیوں کی نفسیات کے ماہر پی ایچ ڈی ڈاکٹر ہیں سو انکی کہانیوں میں بھی اسکا عکس ظاہر ہوتا ہے۔
  9. آپ نے کہا کہ انوکھے واقعات دیکھنے کو ملے گے۔ کوئی مووی لگی ہے کیا فورم پر؟ اور انوکھے واقعات مطلب فکشن ٹائپ مووی ہوگی؟ ہے نا
  10. ایک عرض ہے فورم کی انتظامیہ سے کہ اگر ممکن ہو تو اس کہانی کو فری سیکشن میں ہی چلنے دیا جائے اور پیڈ سیکشن کیلئیے کسی نئے سلسلہ کو شروع کرلیا جائے۔
  11. مجھے ایک بات پوچھنی ہے کہ اپڈیٹس جو یہاں۔پوسٹ کی جاتیں ہیں انکا فئل فارمیٹ کیا ہے؟
  12. یہ کہانی شیخو نے شروع کی تھی ابتداء میں پڑھنا شروع کی تو بس درمیانے درجہ کہ ہی لگی کیونکہ ہمارے منہ کو تو ڈاکٹر فیصل کے قلم کا ذائقہ لگا ہوا ہے ہمیں اب کہاں کسی کی تحریر میں چارم محسوس ہوتا ہے لہذا کچھ صفحات پڑھ کر چھوڑ دی تھی۔ کافی عرصہ بعد اس کہانی کو کھولا تو معلوم ہوا شیخو جی غائب ہیں اور اس کہانی کی اپنی قسمت کہ ڈاکٹر فیصل کے قلم کی نوک تلے آگئی۔ جب میں نے دوبارہ اس کہانی کو پڑھنا شروع کیا تو یہ کہانی دوسو اسی صفحات مکمل کرچکی تھی جبکہ میں نے کل پچاس صفحے پڑھے تھے بس پھر میری تو نکل پڑھی۔ ڈاکٹر کے قبضے میں آتے ہی کہانی نے صحت پکڑ لی ہے اور اب اتنی جاندار ہوگئی ہے کہ اس نے ہوس جو ٹف ٹائم دے دیا یے۔ ایک بات اور کہنی ہے کہ کوئی بھی رائٹر یو اسکی کہانی کی اپڈیٹ کی رفتار اس فورم کے مقابلے میں کچھ بھی نہیں۔ یہی وجہ ہے کہ اپنے کچھ تحفظات کے باوجود میں آج تک اس فورم پر موجود ہوں۔ میں نے ایک فورم پر ٹین ایجر گرلز سیکس فینٹسی سے متعلق ایک اسٹوری پڑھی ہے ایک انتہائی شاندار اسٹوری جسکی جتنی تعریف کی جائے وہ کم ہے مگر اس اسٹوری کی بد قسمتی کہ اسکی رائٹر چھ ماہ سے غائب ہے۔ کہنےکا مقصد یہ ہے کہ اپڈیٹ اور معیار کو جو درجہ اس فورم پر موجود ہے وہ کہیں اور نہیں ہے۔
  13. اور ہاں یہاں آپ اپنے بارے میں ایک بات گول کرگئے جو صرف مجھے معلوم ہے اور مجھے اس پر فخر رہیگا کہ جو بات آپ ظاہر نہیں کرسکتے وہ بات صرف مجھے معلوم ہے
×
×
  • Create New...