Jump to content
Private Cloud Activation Last Date 01-10-2020 After Last Date Not include Previous Purchase in your Private Cloud ×
URDU FUN CLUB
Private Cloud Activation Last Date 01-10-2020 After Last Date Not include Previous Purchase in your Private Cloud
Sign in to follow this  
گوریلا

انجان راہیاوں کی محبت کے دیپ.

Recommended Posts

واہ بھائی جان آپ نے تو سکسر ہی مار دیا وہ بھی نو بال پے. خوب اپڑیٹ تھی سیکس بھی ایکشن بھی. اور لیٹ جو ہوی اسکی کمی بھی پوری کردی اس سے لمبی اپڈیٹ شاید ہی دی ہو کسی نے. لیٹ ہونے کا حق ادا کر دیا. آگے بھی ایسے ہی لکھتے رہے. سلامتی کی ڈھیروں دعائیں 

Share this post


Link to post
Share on other sites

اردو فن کلب کے پریمیم ممبرز کے لیئے ایک لاجواب تصاویری کہانی ۔۔۔۔۔ایک ہینڈسم اور خوبصورت لڑکے کی کہانی۔۔۔۔۔جو کالج کی ہر حسین لڑکی سے اپنی  ہوس  کے لیئے دوستی کرنے میں ماہر تھا  ۔۔۔۔۔کالج گرلز  چاہ کر بھی اس سےنہیں بچ پاتی تھیں۔۔۔۔۔اپنی ہوس کے بعد وہ ان لڑکیوں کی سیکس سٹوری لکھتا اور کالج میں ٖفخریہ پھیلا دیتا ۔۔۔۔کیوں ؟  ۔۔۔۔۔اسی عادت کی وجہ سے سب اس سے دور بھاگتی تھیں۔۔۔۔۔ سینکڑوں صفحات پر مشتمل ڈاکٹر فیصل خان کی اب تک لکھی گئی تمام تصاویری کہانیوں میں سب سے طویل کہانی ۔۔۔۔۔کامران اور ہیڈ مسٹریس۔۔۔اردو فن کلب کے پریمیم کلب میں شامل کر دی گئی ہے۔

معزرت میں قسط نہیں دے سکا اس کی وجہ یہ ہے کے میرا ایک ساتھی مجھ سے جدا ہوگیا اس وجہ سے ذہینی طور پر اپ سیٹ ہوگیا تھا.

آخری قسط آج بھیج دوں گا.

Share this post


Link to post
Share on other sites

میں نے غصے سے اس کو کہا ہٹ جاؤ میرے راستے سے اس نے کہا ایک دفعہ مجھے اپنے پاس آنے دو سکس کرنے دو میں اس کو تھپڑ مارنے لگا لیکن روک گیا ایک عوعت کیا ہاتھ اُٹھانا میں نے اس کو بازو سے پکڑ کر سائیڈ پر کیا اور نکل آیا ہائیڈ میں آکر سو گیا شام کو میری انکھ کھلی تو میں باہر آیا تو دیکھا آرمی ہر طرف آئی ہے کم از کم 20 یونٹیں تھی میں نے پوزیشن لی اور بریسٹ پرسیفٹی رکھی اور ٹریگر پر انگلی رکھی اور بیٹھ گیا میرے سامنے 5 فوجی آۓ تو میں نے فائرکردیا وہ موقع پر گر گے اور میں وہاں سے نکل گیا اب آرمی اور میرے پیچھے آرہی تھی میں نے پھر پوزیشن لی اور بیٹھ گیا کچھ دیر گزری تو ایک کیپٹن اپنی نفری کے ساتھ آرہا تھا میری طرف ہی میں پھر سے تیار ہوگیا جیسے ہی وہ پاس آۓ میں نے فائر کھول دیا یہ 8 موقع پر ڈھیر ہوگے میں پھر سے یہاں سے نکلا اور آگے جانے لگا لیکن سامنے بھی آرمی آرہی تھی آرمی نے مکمل کریک ڈاؤن کیا ہوا تھا پورے جنگل میں آرمی ہی آرمی تھی میں ایک جگہ چھپ کر بیٹھ گیا اندھیرا ہو رہا تھا میں نے کہا ساریہ چل زندگی کی آخری نمازیں پڑ لے اور میں نے تیمم کیا اور نمازیں پڑھی آرمی سرچ لائٹوں کے ساتھ تھی اوپر سے ہیلی الگ لائٹس لے کے آۓ تھے ہر جگہ وہری لائٹ چل رہے تھے اتنا کچھ اتنی نفری میں اکیلا میں نے کرالنگ کرتے ہوۓ آگے گیا تو دیکھا آرمی نے یہاں اپنے ٹینٹ لگاۓ اور رات رکنے کا موڈ تھا میں نے گرنیڈ نکالے اور ان پر پھینک کر فائرنگ کر دی اس سے پہلے وہ سنبھالتے میں پھر نکل گیا اب ساری رات میں نے آرمی کو گھومایا جنگل میں جہاں آرمی رکتی میں فائر کردیتا میرا ایمونیشن ختم ہو رہا تھا میں وہاں سے اپنی ہائیڈ کی طرف نکلا یہاں پہنچ کر میں نے گولیاں اور گرنیڈ لیے اور پھر سے نکل گیا بھوک لگی تھی میں نے ایک سول کے گھر کھانا کھانے کو رکا کھانا کھایا تو آرمی کو کسی نے مخبری کر دی ساری رات آرمی کو ذلیل کرنے کے بعد میں ابھی کھانا کھا کے فارغ ہوا ہی تھا کے آرمی نے اعلان کیا کے میں سرینڈر کر دوں میں نے گھر کی فیملی کو باہر نکلنے کو کہا اور جو فوجی علان کر ہا تھا اس کے سر میں گولی ماری اس کی دوبارہ آواز نا نکل سکی اور جوجو سامنے تھا سب پر فائر کیا کچھ مرے کچھ زخمی ہوۓ میں نے مکان میں اپنی پوزیشنوں کی جگہ دیکھی اور دشمن کی چال دیکھنے لگا جیسے ہی کوئی فوجی کسی اوٹ سے. نکلتا اس کا سر چیرتی ہومیری گولی جاتی کسی کی ٹانگ نظر آتی تو ٹانگ پر گولی مارتا تو باقی وہ خود باہر نکل آتا شام تک یہی سلسلہ چلتا رہا شام کو آرمی کی تازہ دم یونٹیں آئی جیسے ہی وہ میری رینج میں آئی میں نے چن چن کر مارے ادھے تو پوزیشنوں پر پہنچنے سے پہلے ہی مارے گے مجھے بھوک لگی تو میں نے دیکھا خشک روٹیاں تھی وہ پانی میں بھگو کر کھا لی جیسے ہی آرمی کا کوئی بھی فوجی حرکت کرتا میری گولی اس کی موت کا پیغام لےجاتی 2 میگزینیں خالی ہوگی 40 والی 4 بقایا تھی میں بیھٹا تھا تو مکان کے پیچھے والی سائیڈ سے مجھے کچھ آوازیں محسوس ہوئی میں نے جیسے ہی کھڑکی سے جھانکا تو دیکھا نیچے 5 سکھ کھڑے تھے اندر آنے کو تیار تھے میں نے گرنیڈ نکالا اور اوپر سے گرادیا وہ اُپر گرا اور پھٹا اور اچانک ایک برسٹ آیا جو میرے بائیں بازو پر لگا مجھے شدید درد کا احساس ہوا میں جلدی سے اندر ہوا اور ایک کپڑا پھاڑ کر اپنے زخم پر باندھنے لگا اس دوران باہر شور ہوا کے اس گولیاں لگی ہیں ایک افسر اپنے ماتحتوں کو گیالیاں دیتے ہوۓ کہ رہا تھا آگے بڑو ایک بندا نہیں مار سکتے تم لوگ میں نے تیاری کی جیسے ہی وہ اند آۓ میں نے فائرنگ کر دی سب دروازے پر ڈھیر ہوگے یہ 4 فوجی بھی گی باہر سے پھر فوجی چیخا سر وہ زندہ ہے تو افسر نے گالی دی اور بولا پتہ نہیں کس چکی کا آٹا کھاتا ہے میں نے کھڑکی سے دیکھا وہ افسر سامنے کھڑا سب کو لیڈ کر رہا تھا اس کے ساتھ 2 صوبیدار تھے میں نے برسٹ پر سیفٹی کی اور گولی چلا دی میرے برسٹ سے وہ تینوں گرگے اور ایک فوجی چیخنے لگا صاحب کو پکڑو جیسے ہی کوئی فوجی سامنے آتا اِن کو اُٹھانے تو میں اس کو بھی ڈھیر کر دیتا فوجیوں کو میری پوزیشن کا پتہ چل گیا انہوں نے دشکا گن سامنے فکس کی اور ایک فوجی جیسے ہی اگے بڑا افسران کی لاشیں اُٹھانے میں نے گولی چلا دی جیسے ہی میری گولی چلی دشکا کی گولیاں میرا جیسم چیرتی ہوئی نکل گی 5 گولیاں آر پار ہوئی خون پوری رفتار سے نکلنے لگا ایک گولی دل میں لگی میری انکھیں بند ہوگی.

اس کے بعد فوجی اندر آیا ساتھ ایک مرہٹا بٹالین کا برگیڈئر تھا اس نے کہا اس کی ٹانگوں میں رسہ ڈالو اور پورے راجوری میں اس کی لاش کو گھومنا ہے.

4 دن لاش گھومنے کے بعد مسلمانوں کے حوالے دیا اور رات کے کسی پہر آمنہ نے آخری دفعہ دیدار کیا اور خاموشی سے ایک گمنام قبرستان میں دفنا دیا گیا.

 

نہیں ڈرتے جانے دینے جانیں دینے سے یہ جانیں جایا کرتی ہیں.

جب فیصلے حق اور باطل کے تاریخ سنایا کرتی ہیں

میدان سجاۓ جاتے ہیں مینار سروں بنتےہیں

 

Share this post


Link to post
Share on other sites
On 7/3/2020 at 11:34 AM, گوریلا said:

معزرت میں قسط نہیں دے سکا اس کی وجہ یہ ہے کے میرا ایک ساتھی مجھ سے جدا ہوگیا اس وجہ سے ذہینی طور پر اپ سیٹ ہوگیا تھا.

آخری قسط آج بھیج دوں گا.

کہاں ہے آخری قسط

Share this post


Link to post
Share on other sites

انتہائی شاندار کہانی ہے بہت بہت شکریہ:goldy2::6793::7:

Share this post


Link to post
Share on other sites

کیا بات ھے گوریلا جی آپ کی آپ بیتی پڑھ کے یوں محسوس ھوا جیسے میں خود کشمیر پھہچ گیا 

آپ لوگوں کا خون راٸیگاں نہیں جاۓ گا

کشمیر بن کے رھے گا پاکستان  ان شاء اللہ

Share this post


Link to post
Share on other sites
Sign in to follow this  

×
×
  • Create New...