Jump to content
URDU FUN CLUB
Sign in to follow this  
Barani

پرائی شادی میں۔۔۔۔۔۔۔دیوانہ

Recommended Posts

سلام دوستو۔۔۔ ایڈ من کی اجازت سے میں ایک سلسلہ چھوٹی اور چلبلی  کھانیوں کا شروع کرنا چاھتا ھوں ۔۔۔جس میں سب واقعات سچے ھوں  گے ۔۔۔ایک ایسا دوست جو شھر بھر کے  کسی کی بھی شادی میں کام کاج کرانے پھنچ جاتا ھے ۔۔۔لیکن گھرکے اندرونی کام۔۔۔ اور صبح ھی صبح دولھا کو گھیر کر رات کی کھانی سننا جس کا دلچسپ مشغلہ ھے۔۔۔ ھاں بھئی بتا کتنے گول مارے۔۔۔۔ ناک تو نہ کٹا دی ۔۔۔ دوستوں کو اگر ہ سلسلہ پسند ھو تو شروع کردیں۔۔۔ ھاں ایک بات اور ھر میمبر اپنی پسند کی کھانی اس میں ڈال سکتا ھے۔۔۔ یہ ایک دو قسطوں میں ختم ھو جایا کرے گی۔۔۔۔ میرے خیال میں اسی ٹاپک کے ساتھ اگر ھم کھانی نمبر ڈال کر اگر لکھیں تو ھر ایک اس میں کم از کم اپنی شادی کا واقعہ تو لکھ ھی سکتا ھے ۔۔۔نام بدل کر۔۔۔۔ میرے پر تو یہ ضرب المثل پوری فٹ ھے۔۔۔ کہ میں ایسا کرتا ھی رھا ھوں۔۔۔۔ اور مجھے کسی بھی شادی میں دیکھ کر جلنے والے دوست یہی گانا بھی لگا دیتے تھے۔۔۔۔ کل تک میں جوابات کمنٹس کا منتظر رھوں گا۔۔۔۔ آ ئیڈیا اچھا لگا یابرا۔۔۔۔کمنٹس لازمی 

Share this post


Link to post

اردو فن کلب کے پریمیم سیریز اور پریمیم ناولز اردو فن کلب فورم کا قیمتی اثاثہ ہیں ۔ جو فورم کے پریمیم رائیٹرز کی محنت ہے اور صرف وقتی تفریح کے لیئے فورم پر آن لائن پڑھنے کے لیئے دستیاب ہیں ۔ ہمارا مقصد اسے صرف اسی ویب سائیٹ تک محدود رکھنا ہے۔ تاکہ یہ گناہ جاریہ نہ بنے ۔ اسے کسی بھی طرح سے کاپی یا ڈاؤن لوڈ کرنے یا کسی دوسرے دوست یا ممبر سے شیئر کرنے کی بالکل بھی اجازت نہیں ہے ۔ جو ممبران اسے اپنے دوستوں سے شئیر کر رہے ہیں ۔ ان کو مطلع کیا جاتا ہے کہ وہ اسے کسی دوسرے ممبر سے بھی شئیر نہیں کر سکتے ۔ ورنہ ان کا مکمل اکاؤنٹ بین بھی ہو سکتا ہے۔ ڈیٹا شیئر کرنے والہ ممبراس بات کا عملی اقرار کرے گا کہ وہ بروز قیامت فورم انتظامیہ، سٹوری رائیٹر اور فورم ایڈمن کے تمام گناہوں کا اکلوتا وارث ہو گا ۔ اور بروز قیامت اپنی تمام نیکیاں (جو بھی اس کے نامہ اعمال میں ہوئیں ) بروز قیامت مجھے دینے کا پابند ہو گا۔ اگر کوئی ممبر اب بھی ایسا کرتا ہے اور گناہ جاریہ کا سبب بنتا ہے ۔ تو اس شرط کو ایگری کرتے ہوئے شیئر کر سکتا ہے ۔ فورم کو اس ایگری منٹ پر اجازت دینے میں کوئی اعتراض نہیں ۔ ایڈمن اردو فن کلب

میری طرف سے اجازت ہے ۔بس فورم رولز کا خیال رکھیں ۔ 

Share this post


Link to post
4 minutes ago, Administrator said:

میری طرف سے اجازت ہے ۔بس فورم رولز کا خیال رکھیں ۔ 

شکریہ سر جی۔۔۔۔ میں چاھتا ھوں کہ کچھ ایسا ھو روزانہ کلب وزٹ کرنے والے کو کچھ نیا ملتا رھے تاکہ میمبر ان ایکٹو رھیں۔۔۔۔ بس فقط تین  اور  کمنٹس اور رشروع ھوجاوں گا۔۔۔۔  میں 

Share this post


Link to post
5 hours ago, Barani said:

شکریہ سر جی۔۔۔۔ میں چاھتا ھوں کہ کچھ ایسا ھو روزانہ کلب وزٹ کرنے والے کو کچھ نیا ملتا رھے تاکہ میمبر ان ایکٹو رھیں۔۔۔۔ بس فقط تین  اور  کمنٹس اور رشروع ھوجاوں گا۔۔۔۔  میں 

بھائ کہانی شروع کرو. شاید کچھ ہم بھی مصالحہ ڈال دیں.. 

Share this post


Link to post
10 hours ago, Abid bhai said:

خیال اچھا ہے غالب

شکریہ  چچا ئے غالب۔۔۔ ھاھا

Share this post


Link to post
11 hours ago, Dr. Zeus said:

بھائ کہانی شروع کرو. شاید کچھ ہم بھی مصالحہ ڈال دیں.. 

آج شام تک ۔۔افتتاح متوقع ۔۔بشرط زندگی۔۔ 

Share this post


Link to post

یہ اس وقت کی باتیں ھیں جب چھوٹے شھروں میں شادی حال نہ تھے اور لوگ شادی کی تقریبات کے لئے گلی محلے میں ٹینٹ لگا لیا کرتےتھے۔۔ یہ بڑے بڑے لاؤڈ اسپیکر چھتوں پر چڑھنے کے ساتھ گانے اونچی آواز میں ایک ھفتہ پھلے ھی چلنا شروع ھوجاتے تھے۔۔محلے بھر کے لڑکے رات کو دیر تک ڈانس وغیرہ کرنے پھنج جاتے تھے۔۔ ایسے میں دولھا کے باپ کے دوست بڑے بھائی کے دوست تو انتظامات کو ڈسکس کرتے تھے۔۔ لیکن دولھا کہ کچھ خاص دوست بھی ھوتے تھے ۔جو اس کو دوسروں کی شادی رات کے سچے جھوٹے واقعات سنا سنا کر ۔بوسٹ آپ کرتے رھتے تھے۔۔۔ میرا تجربہ رھا ھے کہ دولھا اس طرح کی باتوں سے حوصلہ کے بجائے کم ھمتی کا شکار ھوجاتا ھے۔۔۔ اور شب زفاف آتے آتے ۔۔اپنی ھمت وطاقت کے بجائے ۔۔ ٹائمنگ بڑھانے والی گولی اپنے خاص دوست کے ذریعے منگوانے کے ساتھ ھاتھ باندھ کر کسی کونہ بتانے کی قسم بھی دیتے ھیں۔۔ اور میرے جیسے ھر دوست کو یہی باور کراتے ھیں ۔تو تو اپنا جگری یار ھے  بس رات کی پوری کھانی بس سب سے پھلےمجھے ھی سنانا ۔۔ رات کو آخری جملے ھوتے کہ 👃 نہ کٹوا دینا۔۔۔ دراصل اس طرف اشارہ ھوتا تھا کہ جب تیری کھانی کسی اور دولھا کو سنائی جائیگی تو کم گول کرنے کی وجہ سے سنگت کی ناک کٹ جائے گی ۔۔اور صبح ملتے ھی پھلا سوال یار سچ بتانا کتنے چھکے مارے۔۔۔ یعنی کتنی باری لی۔۔ کیا کیا کچھ کیا ۔۔اسکی چیخ نکلوائ خون کتنا نکلا وغیرہ۔۔۔بھر حال میں شروعات کرتا ھوں۔۔ کھانی نمبر 1..

ایسے بھی دوست ھوتے ھیں کیا۔۔؟

ناصر۔۔ شاکر ۔۔۔ ذاکر۔۔ یہ تینوں دولھا میاں رشید کے ان خاص دوستوں میں سے تھے جن کا اوپر  ذکر کیا گیا ھے۔۔۔مھندی والی رات ان کو پتہ  بیٹھک میں بٹھا کر انتظار کرو میں آتا ھوں اکیلا ھی ۔۔لڑکیوں کے درمیاں  بیٹھ کر مھندی لگوا آیا۔۔۔جبکہ دوستوں کا خیال تھا کہ ھم بھی مٹک مٹک کر ناچنے والیوں کے دیدار سے آنکھیں سینکیں گے ۔۔بڑے بھائ کی تنبیہ پر اس نے یہ کام کیا جس پر یہ دوست ناراضگی کا اظہار کرنے لگے ۔۔لیکن پھر کچھ دیر بعد کھانا کھانے کے بعد بظاھر خوش وخرم اٹھ کر صبح جلدی آنے اور بارات کے ساتھ جانے کا وعدہ کر گئے۔ لیکن شاکر اور ناصر نے اس بات کا بدلہ لینے کی ٹھان لی اور صبح ذاکر کے ساتھ  مل کر پلان بنایا۔۔۔ بھر حال شادی ھوئ رخصتی  کرکہ دلھن کو کمرے میں پھنچا دیا گیا ۔اب ان لوگوں نے جو دولھا کو میچ میں زیادہ سے زیادہ چھکےمارنے کی ترغیب دی تھی اسکے پیش نظر۔۔۔ شاکر نے دولھا کو کھا کہ یار یہ تو تجھ سےموٹی ھے زیادہ صحت مند ھے۔بھت زور لگانا پڑے گا۔۔ تجھے ھمت نا ھارنا باھر تک چیخیں انی چاھیئے۔۔۔سالے اسکی درد کی پرواہ نہ کرنا بس دے دھما دھم۔۔دے دھنا دھن شروع ھوجانا۔۔ جب آدھی  رات کے وقت جب اندر جانے میں تھوڑی سی دیر باقی ھوتی ھے تو آدمی ایکسائٹمنٹ میں سارے زور آج ھی آزمانے کے چکر میں اجاتا ھے۔۔۔ بھر حال گولی منگوائی گئی۔۔ سو پچاس نہی پورےپانچ سو جس میں منہ بند رکھنے کی مٹھائ بھی شامل تھی۔۔۔ اب اصل گیم شروع ھوئ ۔۔ گھر کی بڑی بوڑھیاں کمرے تک جانے کا راستہ کلئر کرتی ھیں اور بھابی یا بڑی بھن اندر جانے کے واسطے بلاتی ھیں ۔۔ یہاں ایک بات اور بھی مشاہدے میں آئی ھے کہ دولھا سائڈ کی وہ خواتین جو ابھی پچھلے سال دو میں یہ رات گذار چکی ھوتی ھیں ۔۔ وہ بھی اندر کی کھٹ پٹ پر کان لگا کر کچھ نیا سننے یا چیخ مارنے کی منتظر ھوتی ھیں ۔۔۔یا اگر گھر چھوٹا ھو تو کھڑکی ئ قریب کی چارپائی پر قابض ھوتی ھیں کہ دیکھو پھلے کون باھر آتا ھے۔۔اور اسکے چھرے سے کیا عیاں ھوتا ھے۔۔۔ اچھا جی تو راستہ کلئر کا کاشن دولھا بھائ کو مل چکا ھے لیکن یہ گولی آجانے کے انتظارِ میں بار بار شاکر کو فون کرتا ھے وہ کھتا کہ بھائ موٹر سائیکل پر ھوں ڈھونڈ ڈرھا ھوں ۔۔۔تیرے کو بھی آدھی رات کو یاد آیا کنجر اب صبر کر میں آرھا ھوں۔۔۔ ایسے میں رات کے دو بج گئے آخر بڑی بھن اور بھابھی کے اصرار پر دولھا کو زبردستی کمرے میں داخل کردیا جاتاہے۔۔ یہ بھی پریشان کہ بغیر ھتیار کے مس فایئر نہ ھوجائےابھی یہ انگوٹھی پھنس کر گھونگٹ اٹھاتا ھے کہ شاکر کا فون اجاتا ھے جو گھبراھٹ کا اظہار کرتا ھے کہ یار ناصر کے ابے کو ایمرجنسی میں اسپتال لے گئے ھیں اور تجھے اپنی گولی کی پڑی ھوئ ھے ۔۔چل جلدی باھر آ ھم تینوں اس کو پوچھنے جارھے ھیں۔۔۔ یہ بھانے بنانے کی کوشش کرتا ھے تو ناصر کا بھی فون اجاتا ھے کہ یار جلدی کر۔۔ اتنے میں ذاکر بھی فون پر بتاتا ھے کہ یار میں تو پیاز چھل وارھا تھا تیرے ماموں کے ساتھ صبح دیکھوں میں ڈالنے کے لیئے کہ۔مجھے ابو کے اٹیک کا فون آیا اب میں تو جا رھا ھوں تم دیکھ لو کیا کرنا۔۔۔اور فون کاٹ دیتا ھے۔۔ یہ جلدی جلدی باھر آتا ھے ۔۔تو ناصر اس کو ساتھ بٹھا کر نکل جاتا ھے ۔۔ مان جی اسپتال حیدرآباد وھاں پر بھاگ بھاگ کر معلوم کرتے ھیں تو کھیں نہی ملتے ۔۔اب دولھا کو خیال آتاھے کہ ذاکر کو فون ھی کرکہ پوچھ لے تو وہ کھتا ھے کہ یار میں تو شاکر کہ ساتھ میمن اسپتال میں خود ڈھونڈ رھا ھوں۔  روھانسی آواز بنا کرفوں کاٹ دیتا ھے۔۔اب جب ناصر کو بتاتا ھے کہ وہ میمن اسپتال گیا ھے تو یہ اس کی طرف موٹر سائیکل پر روانہ ھوجاتے ھیں ۔۔۔میمن اسپتال کے باھر یہ چاروں ملتے ھیں ۔۔اور راجپوتانہ کی طرف چاروں روانہ ھوجاتے ھیں ۔۔۔ وھاں پر بھی مریض ھو تو ملے ۔۔۔ ٹھنڈ سردی کے مارے یہ ایک ڈھابے پر چائے پینے بیٹھ جاتے ھیں۔۔ اب رشید کی حالت دیکھنے والی ھوتی ھے۔۔ دولھا والا لال سوٹ  پھنے چائے پیتے ھیں تو ساڈے چار بج چکے ھیں اور فجر کی اذان ھو رھی ھیں ۔۔ تب یہ کھتے یار شاکر تو اسکو گھر چھوڑ ھم دیکھ لیتے ھیں ۔۔۔تو دولھا کے بولنے پھلے شاکر بولتا یار اسی طرف چلتے ھیں ھلال احمر پر دیکھ لیں گے۔۔ چل ٹھیک ھے اب رشید بولتا کہ نہی میں بھی ساتھ چلوں گا تو ذاکر بڑی مشکل سے ھنسی ضبط کرتے ھوئے کھتا نہی یار تونے  چھکے بھی مارنے تو جا۔۔۔جب یہ اسکو گلی نکڑ پر اتار کر بھاگتے ھیں تو سامنے سے ذاکر کےا با نماز پڑھنے جارھے ھوتے ھیں۔

 جاری ھے۔۔ دوسری قسط فائنل۔۔       

 

پرائی شادی میں۔۔۔ دیوانہ

 کھانی نمبر 1 کا آ خری  حصہ۔

ذاکر کے باپ نے اسکو تعریفی نظروں سے دیکھ کر کھا کہ دولھا میاں نماز پڑھنے اٹھ گئے ۔ بڑی بات ھے۔ رشید نے جل کر کھا گھر سے تو میں جنازہ پڑھنے نکلا تھا۔۔ لیکن مردہ ہی زندہ ھوگیا۔۔ یہ بھاگتا ہوا گھر میں داخل ھوا تو بڑی باجی نے حیرت سے پوچھا کیا تو کھڑکی سے کود گیا تھا۔۔ میں تو تجھے کمرے میں دھکیل کر پھر ھی سونے گئی تھی اس نے کھا باجی باتیں چھوڑ مجھے دودھ زرا گرم کرکےدے ۔۔ اس نے کھا رات رکھا تو تھا ٹیبل پر وہ پی گیا کیا تو۔۔اس نے چڑ کر کھا دینا ھے تو ٹھیک ورنہ باتیں مت سنا۔۔دودھ کے ساتھ جلدی سے گولی منہ میں ڈال کر کمرے میں داخل ھوا تو بیگم نماز پڑھنے میں مصروف تھی ۔اب کیا کیا جاسکتا تھا سوائے انتظار کے۔ اسکے فارغ ھونے کے انتظار میں دولھا رشید صاحب سوگئے تھے۔بیگم نے کب آکر جوتےاتارے اسے پتہ ھی نہ چلا۔۔۔ مزہ تو تب آیا جب دس بجےکےقریب آنکھ ابو کے شور مچانے پر کھلی کہ مھمان پھنچ رھے ھیں اور نواب صاحب سو رھے ھیں۔۔دلھن کی تو جرات نہ ھوئی اماں نے ھی کھینچ کر اٹھایا۔۔ڈبل مزہ تو تب آیا دوستو جب نہا دھو کر دولھا رشید اسٹیج پر براجمان ھوئے ۔اور گولی کے اثر سے لن کھمبا بن گیا۔۔ دیھاتی لوگ ھار بھی پھناتے اور تین دفعہ گلے بھی ملتے ھیں۔ اب ھر آنے جانے والے کو گلے ملنے پر ۔کھمبا دوسروں سے ٹکراتا تو عجیب فیلنگ ھر ایک ھوتی۔۔ اور تینوں دوست دور سے ھی مزہ لے رھے تھے اس کے بلانے پر بھی کام کابھانہ کرنے لگے کیونکہ وہ جانتے تھے کہ اس نے گالیاں ھی دینی تھیں۔۔زرا تصور کریں جب اسکے سسرالی بس بھر کے تو اس کی حالت کیا ھوئی ھوگی ھاروں کی تعداد جب زیادہ ھوگئی۔تو تھوڑی سی آ ڑ بن گئی۔۔ لیکن سسرالیوں نے کھا کہ یہ سب اتارو ۔۔تب ھم اپنے لائے ھوئے ھار پھنایئں گے۔۔ ھم لوگوں کا تو ھنس ھنس کر پیٹ میں درد ھوگیا۔۔ آخر ایک دوست نے املی کا پانی بھیجا تو اس کو کچھ راحت ملی۔۔اب شام کو سب کے سونے کے بعد جب کمرے میں گئے تو سالی صاحبہ پلنگ پر بھن سے باتیں کرتے کرتے سوگئی تھی۔۔۔ایک نئی افتاد کچھ بیگم اور کچھ باجی کے تعاون سے کمرہ خالی کروالیا گیا۔۔ اب جب میچ کا وقت شروع ھوا تو گولی توتھی نہی آخر اسنے بانھوں میں بھر کر نئی نویلی دلھن کو چومنا چاٹنا شروع کردیا  کہ اتنے میں پھر موبائیل کی گھنٹی بجنا شروع ہوگئی  اس نے نمبر پھچان کر گالیاں دینا شروع کردیں انھوں نےتو معذرت کرنےکے واسطے فون کیا۔۔لیکن اسکی گالیاں ھی بند نہ ھوں تو دولھن ھی شرما کر کمرے سے نکل گئی بھر حال قصہ مختصر کہ بعد ازاں  چائے پی کر سیکس کا مرحلہ شروع ھوا تو دولھا  دو ھی گول کرکے سوگئے۔۔

 یہ ریئل واقعہ ھے اس میں اپنی طرف سے کچھ بھی نہیں ڈالا طوالت کی وجہ سے شاٹ کردیا میں نے۔۔۔ کل جو واقعہ بتاؤ ں گا ۔۔ اس میں تو خود راقم کو دو تھپڑ ایک مکہ دولھا سے کھانا پڑا۔۔ ملتے ھیں آپکے کمنٹس میں ۔ھنسے تے وسدے رھو۔۔۔۔اپکا بارانی ۔  ۔ 

Share this post


Link to post

ہاہاہاہاہا..... اچھا سٹارٹ لیا ہے. واقعی پہلی رات یہی تماشے ہوتے ہیں

Share this post


Link to post
4 hours ago, Dr. Zeus said:

ہاہاہاہاہا..... اچھا سٹارٹ لیا ہے. واقعی پہلی رات یہی تماشے ہوتے ہیں

شکریہ۔۔۔ آگے آگے دیکھیے۔۔۔ھوتا ھے کیا

Share this post


Link to post

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now
Sign in to follow this  

×
×
  • Create New...